بنا گالی و گولی کے کفر و شرک اور غربت و جہالت کے خاتمے کا آسان طریقہ

تحریر: مولانا ابرار عالم (May 13, 2018)

قرآن کریم سورہ نمبر 4 آیت نمبر 1 کے مطابق تمام انسان حضرت آدم و حواء علیہما السلام کے اولاد ہیں لیکن ان میں سے اپنے وقت کے نبی کی باتوں پر جو ایمان نہیں لائے وہ سب کافر ٹھہرائے گئے۔

اسی طرح جو لوگ آخری نبی محمد صلی اللہ علیہ وسلم پر ایمان نہیں لائے قرآن کریم سورہ نمبر 3 آیت نمبر 19 اور آیت نمبر 85 کے مطابق وہ بھی کافر ہیں اور سورہ نمبر 2 آیت نمبر 161 ، 162 اور سورہ نمبر 3 آیت نمبر 91 کے مطابق اگر یہ لوگ کفر کی حالت ہی میں انتقال کرگئے تو یہ عذاب قبر اور پھر ابدی طور پر جہنم میں جائیں گے۔

اگر ہم اپنے آپ کو سچا اور صحیح مسلمان مانتے ہیں اور عذاب قبر و جہنم کے وجود پر یقین رکھتے ہیں تو میرے خیال میں سب سے بڑی انسانیت اور انسانیت سے ہمدردی و پیار یہی ہوگا کہ تسلی بخش اور مطمئن کرنے والے دلائل کے ذریعہ ان بھٹکے اور گمراہ غیر مسلم بھائیوں اور بہنوں کے حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم سے متعلق ہر قسم کے شکوک و شبہات کو ختم کر دیا جائے تاکہ اگر ان کا جی چاہے تو اپنی مرضی سے اللہ کے حکم سے دین اسلام قبول کر سکیں۔

اس وقت ان کی تعداد پوری دنیا میں تقریبا 5 ارب ہے اور ہم مسلمان تقریبا 2 ارب ہیں۔

اگر یہ سب یا ان میں سے اکثر اللہ کے حکم اور اس کی توفیق سے  ہندو، بدہسٹ، یہودی، عیسائی، پارسی، قادیانی اور سکھ وغیرہ بھائی بہن مسلم ہو جاتے ہیں تو دین اسلام غالب ہو جائےگا اور مسلم پوری دنیا میں اکثریت میں ہو جائیں گے۔ اس طرح ہمارے اور ان کے درمیان جو دین و مذہب کے نام پر نفرتیں، عداوتیں، قتل و غارت گری  ختم ہو جائیں گی اور صدیوں سے جاری جنگیں رک جائیں گی اور جو  کھربوں ڈالرز ان جنگوں پر خرچ ہوتے ہیں  وہ  غربت و جہالت وغیرہ کے خاتمے پر خرچ ہوں گے۔

اس طرح بآسانی کفر و شرک کا بھی خاتمہ ہو جائےگا اور حضرت آدم و حواء علیہما السلام کی یہ اولاد مرنے کے بعد عذاب قبر اور ابدی عذاب جہنم سے بھی بچ جائیں گے انشاء اللہ تعالی اور یہ دنیا بھی جنگوں کے رک جانے سے پر امن اور خوشحال ہو جائےگی اور معصوم مسلم و غیر مسلم مذہبی دہشتگردی، بم دھماکوں، خودکش حملوں اور جنگوں کی تباہی سے اللہ کے حکم سے محفوظ ہو جائیں گے اور انسانیت کا کچھ بھرم رہ جائےگا۔

اللہ تعالی کے فضل و کرم سے میں کئی سالوں سے دنیاکے ہر قسم کے غیر مسلم بھائیوں اور بہنوں سے یہ مندرجہ ذیل سوال پوچھتا آرہا ہوں مگر کسی نے بھی اس کا تسلی بخش جواب نہیں دیا اور مثبت سوچ رکھنے والے غیر مسلم بھائی بہن دین اسلام کی سچائی سے مطمئن ہوئے ہیں۔

آپ بھی یہ سوال کسی غیر مسلم سے پوچھ کر تجربہ کرلیں۔ انشاء اللہ تعالی وہ صحیح جواب کسی صورت بھی نہیں دے سکیں گے اور نتیجے کے طور پر یا تو وہ دین اسلام کی سچائی مان جائیں گے اور اسے قبول کرلیں گے  یا تحقیق کے لئے وقت لے لیں گے اور بے ہودہ  تو ہین آمیز سوالات سے باز آجائیں گے یا کم ازکم اسلام اور مسلمانوں دشمنی تو ضرور چھوڑ دیں گے۔

اس لئے میں چاہتا ہوں کہ مندرجہ ذیل سوال دنیا کی مشہور زبانوں میں غیر مسلم بھائیوں اور بہنوں تک پہنچادیا جائے تاکہ ان کو اس بارے میں آگاہی ہو اور تحقیق کر سکیں۔

میری سو فیصد تحقیق کے مطابق عذاب قبر میں مبتلا ہونے کی وجہ سے کسی بھی غیر مسلم کی لاش نہ تو زمین کے اندر قبروں میں بوسیدہ ہونے سے محفوظ ہے اور نہ ہی زمین کے اوپر فطری حالت میں محفوظ ہے اور نہ ہی محفوظ رہ سکتی ہے جیسا کہ قرآن کریم سورہ نمبر 16 آیت نمبر 20 ، 21 سے ثابت ہوتا ہے۔

لہذا دنیا کے مسلمانوں ! مندرجہ ذیل اشتہار دنیا کے تمام ٹی وی چینلز اور اخبارات میں خود  دو ورنہ پیسے جمع کرو تاکہ میں دے سکوں۔

وہ سوال اور اشتہار یہ ہے:

اگرحضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم سچے خدا کے سچے پیغمبر نہیں ہیں (نعوذ باللہ) تو ان کے اور شہداء اسلام کے جسموں کو ان کے قبر کی مٹی اور کیڑے مکوڑوں نے اب تک کیوں نہیں کھایا؟

Coronavirus Cure Pakistan