تمام کافروں اور مسلمانوں کے بدن اور روح اللہ کے علاہ کس کے قبضے میں ہیں؟

تحریر: مسلم مین (November 14, 2017)

میں عبادت کرتا ہوں اللہ کی جو کافروں کو ذندگی اور موت دیتا ہے۔جس کے قبضے میں تمام کافروں اور تمام مسلمانوں کے بدن اور روح ہیں۔

بدن اللہ کے قبضے میں ہونے پر عملی ثبوت یہ ہے کہ اللہ مردہ کافروں اور مردہ نافرمان مسلمانوں کے بدن سڑاگلادیتا ہے لیکن اللہ مردہ سچے مسلمانوں کے بدن بنا کوئ کیمیکل استعمال ہوئے خون سمیت سلامت رکھتا ہے۔ جب کہ اللہ کے مقابلے پر کافروں کا کوئ خدا نہیں جو کسی ایک بھی کافر کا بدن بنا کیمیکل استعمال ہوئے خون سمیت سلامت رکھ سکے یا اللہ کے خون سمیت سلامت رکھے ہوئے مردہ سچے مسلمانوں کے بدن سڑاگلاسکے۔

روح اللہ کے قبضے میں ہونے پر عملی ثبوت یہ ہے کہ اللہ نے کسی مردہ کافر اور کسی مردہ نافرمان مسلمان کی روح کو یہ طاقت نہیں دی کہ وہ ذندہ انسانوں کا علاج و آپریشن کرسکے لیکن اللہ نے مردہ سچے مسلمان شاہ عقیق بابا کی روح کو یہ طاقت دے رکھی ہے کہ وہ کئ صدیوں سے لاعلاج مریضوں کا آپریشن و علاج کررہی ہے۔ جب کہ اللہ کے مقابلے پر کافروں کا کوئ خدا نہیں جو کسی ایک بھی مردہ کافر کی روح کو یہ طاقت دے سکے کہ وہ ذندہ مریضوں کا آپریشن و علاج کرسکے یا اللہ کے سچے مردہ مسلم شاہ عقیق بابا کی روح کو ذندہ مریضوں کے آپریشن و علاج کرنے سے روک سکے۔

بے شک اللہ ہی اس کائنات کا اصلی خالق ہے اور اللہ ہی کافروں کا اصلی خدا ہے خواہ کوئ کافر اس حقیقت کو مانے یا انکار کرے۔ موت کے بعد کافر اس حقیقت کو جان کر پچھتائے گا اور افسوس کرے گا کہ کاش وہ دنیا کی ذندگی میں اسلام قبول کرلیتا۔

قُلۡ يٰۤاَيُّهَا النَّاسُ اِنۡ كُنۡتُمۡ فِىۡ شَكٍّ مِّنۡ دِيۡنِىۡ فَلَاۤ اَعۡبُدُ الَّذِيۡنَ تَعۡبُدُوۡنَ مِنۡ دُوۡنِ اللّٰهِ وَلٰـكِنۡ اَعۡبُدُ اللّٰهَ الَّذِىۡ يَتَوَفّٰٮكُمۡ‌ ۖۚ‌ وَاُمِرۡتُ اَنۡ اَكُوۡنَ مِنَ الۡمُؤۡمِنِيۡنَۙ
کہہ دو کہ لوگو اگر تم کو میرے دین میں کسی طرح کا شک ہو تو جن لوگوں کی تم خدا کے سوا عبادت کرتے ہو میں ان کی عبادت نہیں کرتا۔ بلکہ میں خدا کی عبادت کرتا ہوں جو تمھاری روحیں قبض کرلیتا ہے اور مجھ کو یہی حکم ہوا ہے کہ ایمان لانے والوں میں ہوں (سورہ یونس، آیت 104)

Coronavirus Cure Pakistan