شیعوں کے عقائد بالکل کافرانہ ہیں

تحریر: مولانا ابرار عالم (June 11, 2017)

شیعوں کے عقائد بالکل کافرانہ ہیں کیونکہ یہ لوگ ان کو مسلمان نہیں مانتے جن کو حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم مسلمان مانتے تھے۔
مثال کے طور پر محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی دو بیٹیوں کی شادی حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ سے کی۔ظاہر سی بات ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ان کو مسلمان سمجھتے تھے اگر شیعہ حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کو مسلمان نہیں مانیں گے تو لازم آئے گا کہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے (نعوذ باللہ) کسی کافر سے اپنی دو بیٹیوں کا نکاح کردیا جو کہ سراسر باطل اور غلط ہوگا۔
اسی طرح حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے حضرت ابو بکرصدیق رضی اللہ عنہ کی صاحبزادی حضرت عائشہ رضی اللہ عنہا اور حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی صاحبزادی حضرت حفصہ رضی اللہ عنہا سے نکاح کیا ۔ظاہر سی بات ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم ان کو مسلمان سمجھتے تھے ۔اگر شیعہ ان دونوں کومسلمان نہیں مانیں گے تو لازم آئے گا کہ محمد صلی اللہ علیہ وسلم نے( نعوذ باللہ ) کافروں کی بیٹی سے نکاح کیا جو کہ سراسر باطل اور غلط ہوگا۔
یہ سوال کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد یہ تینوں (نعوذ باللہ) کافر ہوگئے تھے تو اس کا جواب یہ ہے کہ پھر حضرت علی، حضرت عائشہ اور دیگر صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے حضرت ابو بکر صدیق اور عمر فاروق رضی اللہ عنہماکو آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے پہلو اور گھر میں کیوں دفن ہونے دیا اگر وہ دونوں کافر ہو گئے تھے؟
نیز ان تینوں صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کی قبروں کے کیڑے مکوڑوں اور مٹی نے ان کے جسموں کو اب تک کیوں نہیں کھایا اگر وہ تینوں حقیقت میں کافر تھے ؟ کیونکہ بقول قرآن کریم سورہ نمبر 16، آیت نمبر 20کے مطابق کافروں کی لاشیں بے جان ہو تی ہیں یعنی بوسیدہ ہو کر مٹی میں مل جاتی ہیں۔مگرمیں چیلنج کے ساتھ کہتا ہوں کہ چاروں خلفائے راشدین کی نعشہائے مبارکہ اب تک بوسیدہ ہونے سے محفوظ ہیں جس سے ثابت ہوتا ہے کہ نیچر یعنی مٹی نے ان کے جسموں کو نہ کھاکر ثابت کردیا کہ وہ سب اللہ تعالی کے نیک بندے تھے اور اللہ تعالی ان سب سے خوش ہے کیونکہ اللہ کی رضا کے بغیر کسی کی بھی لاش سڑنے گلنے سے محفوظ نہیں رہ سکتی۔
لہذا نیچر کے فیصلے سے ثابت ہوا کہ ان چاروں کے عقائد و اعمال مقبول بارگاہ اور ان تمام شیعوں کے عقائد و اعمال باطل اور فاسد ہیں جو ان تینوں صحابہ کرام یعنی حضرت ابو بکر صدیق،حضرت عمر فاروق اور حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہم کو مسلمان نہیں مانتے یا ان کو ظالم اور فاسق و فاجر کہتے ہیں۔
میرا ہمیشہ کے لیے چیلنج ہے کہ ایسے شیعوں کی لاشیں محفوظ نہیں رہیں گی۔ یقین نہ آئے تو میرا چیلنج عالمی اور ملکی میڈیا کے سامنے قبول کرو اور صرف چند لاشیں ہی ایسے شیعوں کی پیش کرکے دکھاؤ ۔میں نے تو آج تک کسی اخبار یا ٹی وی پر ایسے شیعہ کی لاش کے محفوظ رہنے کا کوئی ایک واقعہ کے متعلق بھی نہیں پڑھا اور نہ ہی سنا۔
اللہ تعالی شیعوں کو ہدایت دے یا انہیں دنیا سے ختم کرے تاکہ صحابہ کرام رضی اللہ عنہم اجمعین کے بارے میں کوئی ایک گالی بھی کبھی نہ سن سکوں۔
آمین یا رب العالمین۔
Coronavirus Cure Pakistan