پندرہ گھنٹے بعد بھی شہید بچوں کا خون جما نہیں تھا

تحریر: مولانا ابرار عالم (December 25, 2015)

یہ خبر امت اخبار میں بی بی سی کے حوالے سے شائع ہوئی۔

Fresh Blood of Muslim Martyred Children after Fifteen Hours

اس واقعہ پر تبصرہ:
قرآن کریم کی سورہ البقرہ،سورہ نمبر 2، آیت نمبر154اور سورہ آل عمران،سورہ نمبر 3، آیت نمبر169-171کے مطابق شہدائے اسلام باطنی طور پر زندہ ہیں ، خوش ہیں، اللہ تعالیٰ کے پاس ہیں اور انہیں روحانی غذا دی جاتی ہے۔اس لئے ان کی لاشوں میں صدیوں اور سالوں تک تازہ خون باقی رہتا ہے۔جیساکہ آپ نے پڑھا کہ پندرہ گھنٹے تک خون جما نہیں تھا۔اسی طرح قرآن کریم کی سورہ البقرہ، سورہ نمبر2 ، آیت نمبر161-162 کے مطابق تمام مردہ غیر مسلم اللہ تعالیٰ کی جانب سے دردناک عذاب میں مبتلا ہیں۔اس لئے ان میں سے کسی کی لاش سڑنے گلنے سے محفوظ نہیں رہتی اور ان کی لاشوں میں چند گھنٹوں کیلئے بھی تازہ خون موجود نہیں رہتا۔
یہ فرق اللہ تعالیٰ کے خالق کائنات ہونے پر واضح قابل مشاہدہ دلیل ہے۔جیسا کہ سورہ فصلت، سورہ نمبر 41، آیت نمبر53 میں اللہ تعالیٰ نے خود فرمایا کہ ’ہم عنقریب ان کو اطراف (عالم) میں بھی اور خود ان کی ذات میں بھی اپنی نشانیاں دکھائیں گے یہاں تک کہ ان پر یہ بات واضح ہوجائے کہ یہی (دین) حق ہے۔‘
اس معاملے میں کسی بھی قسم کے سوال کیلئے مجھ سے رابطہ کیا جاسکتا ہے۔
مولانا ابرار عالم 
چیئرمین مذہبی اقوام متحدہ پاکستان
Cell # 1: (0092) 3062045286
Cell # 2: (0092) 3149943699



Subscribe YouTube Channel

Coronavirus Cure Pakistan